خوش آمدید

جستجو

تبلیغات





تیس سالہ مذھبی جنگوں کا منصوبہ اورعظیم مڈل ایسٹ

    تیس سالہ مذھبی جنگوں کا منصوبہ اورعظیم مڈل ایسٹ

    عوامی نظر سے، آج کا جدید یورپ تاریخ کے ابتدائی دورسے ہی ایک ترقی یافتہ تہذیب وتمدن رہا ہے جہاں کے عوام ہمیشہ سے جمہوریت کے خواہاں تھے اورصلح وصفائی ان کی زندگی کا لازمی حصہ رہا ہے۔ہرمغربی شہر اورملک کے نام جیسے پیرس، لندن، روم، فرانس، انگلینڈ اوراٹلی عوام کے اذہان میں زمینی جنت کا سا ہے کہ جہاں زندگی گزارنے کی ہر انسان آرزو اورخواہش رکھتا ہے۔

    خصوصاً وہ لوگ کہ جو یورپ کے بارے میں اس طرح کا خیال رکھتے ہیں ان کے اذہان میں اس تصور کا لانا بہت مشکل ہوتا ہے  کہ ایک وقت تھا جب پیرس، برلن،لندن اورروم میں کیتھولک اورپروٹسٹنٹوں کے جسموں، گوشت اورہڈیوں کے انبارڈھیروں کی صورت میں پڑے ہوتے تھے

    پورا مضمون پڑھنے کے لئے آگے پڑھیں پر کلک کریں۔


    این مطلب تا کنون 10 بار بازدید شده است.
    منبع
    برچسب ها : ,
    تیس سالہ مذھبی جنگوں کا منصوبہ اورعظیم مڈل ایسٹ

تبلیغات


    محل نمایش تبلیغات شما

پربازدیدترین مطالب

آمار

تبلیغات

محل نمایش تبلیغات شما

تبلیغات

محل نمایش تبلیغات شما

آخرین کلمات جستجو شده

تگ های برتر